حضورعلیه_السلام_بحیثیت_معلم—بشارت فاروقی


چمن میں آمدِخیرالوراء کی جب خبرپائی
کرےتعظیم خوشبو پهول سے باهر نکل آئی
محمد نے دین کی تبلیغ اس انداز سے فرمائی
کهیں اخلاق کام آیا کهیں تلوار کام آئی
الله تبارک وتعالی نے ابتداء سے انسانوں کی هدایت و اصلاح کیلئے همیشه هرزمانے میں معلم اعظم ،خاتم الانبیاء صلی الله علیه وسلم تک 2سلسلے جاری رکهے ______
ایک آسمانی کتابوں کادوسرا اس کی تعلیم دینے والےرسولوں کا ، جس طرح محض کتاب نازل فرمادینا کافی سمجها اسی طرح محض رسولوں کے بهیجنے پربهی اکتفاء نهیں فرمایا بلکه دونوں سلسلے جاری رکهے ، الله کی اس عادت اورقرآن کریم کی شهادت نے قوموں کی اصلاح وفلاح کیلئیے ان دونوں سلسلوں کویکساں طورپرجاری رکها اور ایک بڑےعلم کادروازه کهول دیا که انسان کی صحیح تعلیم وتربیت کیلئیے نه صرف کوئی کتاب کافی هے نه کوئی مربی انسان،بلکه ایک طرف آسمانی هدایت اورالٰهی قانون کی ضرورت هے جواپنی تعلیم وتربیت سے عام انسانوں کوآسمانی هدایت سےروشناس کرکے ان کا خوگربنائے ،کیونکه انسان کااصلی معلم انسان هی هوسکتاهے کوئی کتاب یامعلم نهیں هو سکتا_هاں تعلیم وتربیت میں معین ومددگار ضرورهے ،
چنانچه معلم اعظم ،محمدمصطفی ،احمدمجتبی،تاجدار انبیاءعلیهم السلام کی بعثت سےقبل یه دنیاکفروضلالت کی تاریکیوں میں چهپ چکی تهی،هرطرف جبرواستبداد کادوردوره تها. سب سےبڑامشرک وقت کی مھﺫب ترین شخصیت سمجهی جاتی تهی ایک ایسی سوسائٹی معرض وجودمیں آئی تهی جس میں اسلام کانام جرمعظیم سمجهاجاتاتها ،جس میں بسنےوالوں کےپاس اپنی طرز زندگی کو راه حق پرلانےکیلئیے کوئی آئین یاقانون نهیں تها اب اس کٹهن اورپرفطن دور میں ظلمت میں گهری هوئی سوسایٹی کیلئیے ایک ایسےلاء اور آئین کی ضرورت تهی جس لاء اورآئین کے تحت سوئی هوئی قوم زنده و جاوید هوجائے ______!
چنانچه احکم الحاکمین نےکفر و ضلالت کے اندهیروں میں پڑی هوئی قوم کو ایمانی دولت سے نوازنےکیلئے قرآن مجیدکی شکل میں ایک قانون اور دستوردیا اور اس دستوروقانون سے لوگوں کو آگاه کرنےکلئیے ربِّ لم یزل نے معلم اعظم محمدرسول الله صلی الله علیه وسلم کا انتخاب کرکے اعلان فرمایا !
هُوَالﺫِی بَعَثَ فِی الاُمِّیِین رَسُولاًمِنهُم…… الخ
اسی طرح معلم اعظم نے الله کادیاهواقانون لیکر ارشادفرمایا !
اِنَّمابُعِثتُ مُعَلماً :میں معلم بناکر بهیجاگیاهوں ،معلم اعظم کی بعثت اور تعلیم کے مقاصد میں صراحتاً چار چیزوں کا تﺫکره کیاگیا:
1=تلاوت
2=تعلیم کتاب
3=تعلیم حکمت
4=تزکیه نفوس
محمد رسول الله صلی الله علیه وسلم نے جس طرح دنیاکو نیاقانون عطاکیا . نیاعلم حکمت عطا کیا اسی طرح نئے اخلاق ،نئے جزبات ،کیفیات ،نیایقین وایمان ،نیا ﺫوق وشوق ، نیا جﺫبه ایثار ،نیا شوق آخرت ، نیا جﺫبه زهدو قناعت ، دنیا کی متاع حقیقی ، دولت فانی کی تحقیر ، نئی محبت والفت ، حسن سلوک وهمدردی و مواسات ، مکارم اخلاق ، توبه و انابت ، دعاء وتضرع کی دولت عطاء کی اور انهی خصوصیات کی بنیادپر ایک اسلامی سوسائیٹی ،اسلامی معاشره اور دینی ماحول قائم هو ا جس کو عهد رسالت اور عهد صحابه کے لفظ سے عام طورپر تعبیرکیاجاتا هے .
اگر ان شعبه هائے نبوت کو عام زندگی مین جلوه گر دیکهنا هو تو صحابه کرام کی جماعت کو دیکھ لیاجائے_____
یه معلم اعظم کی وه تعلیم یافته جماعت تهی جس کےمتعلق خلاق عالم نے فرمایا :=مُحَمَّدُرَّسُولُ اللهِ وَالَّﺫِینَ مَعَه اَشِدَّاءُ عَلیَ الکُفَّار _______الخ
اُولٰئِکَ الَّﺫِین صَدَقُوا وَ اُولٰئِکَ هُمُ المُتَّقُونَ
بلکه معلم اعظم کی اس تعلیم یافته جماعت کو ربِّ لم یزل نے آنے والےبندوں کیلئے معیارِ حق ٹھراکرفرمایا____!
فَاِن آمَنُوا بِمِثل آمَنتُم بِه فَقَدِ اهتَدَوا ____________

تحریر محمدبشارت فاروقی


You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *