ملکی خبریں

سانحہ ساہیوال ! معصوم بچوں کو بھی گولیاں لگی تھیں

  • 14
    Shares

6 سالہ منیبہ کے ہاتھ پرزخم شیشہ ٹوٹنے کا نہیں تھا بلکہ اسے گولی لگی تھی، جو اس کے دائیں ہاتھ میں سامنے سے لگی اور پار ہو گئی.

عمیر (جس بچے نے سب سے پہلے بیان دیا) کی دائیں ران میں گولی لگی اورآرپارہوگئی۔

(بچوں کو گولیاں لگی ہوئی تھیں اور یہ انکو پٹرول پمپ پر چھوڑ کر بھاگ گئے)

13 سالہ اریبہ کو 6 گولیاں لگیں جس سے ان کی پسلیاں بھی ٹوٹ گئیں، اریبہ کو سینے میں دائیں اور بائیں گولیاں لگیں۔

نبیلہ (والدہ) کو چار گولیاں لگیں، ایک گولی سر میں لگی۔

خلیل (والد) کو 11 گولیاں لگیں، سر میں بھی ایک گولی لگی۔

ڈرائیور ذیشان کو 13 گولیاں لگیں، سر میں لگنے والی گولی سے ہڈیاں باہرآگئیں۔

چاروں افراد کو بہت قریب سے گولیاں ماری گئیں، اور قریب سے گولیاں لگنے سے چاروں لوگوں کی جلد مختلف جگہ سے جل گئی، افراد کو سر میں بھی گولیاں ماری گئیں۔

(پوسٹ مارٹم رپورٹ)


  • 14
    Shares