بلاگ

روسی سفیر کے قتل کی تائید نہیں‌کی جاسکتی—نوفل ربانی


سنو غیرتمندو !!!!
آپکے جذبات مجروح ہیں
ہر سمت ہمارے لہو کی سرخی ہے
ہر طرف ہمارے اعضاء بکھرے پڑے ہیں
بچوں کی چیخیں راتوں کو سونے نہیں دیتی
برما ، شام ، کشمیر ، افغانستان ، حلب ، فاٹا ، ہندوستان ہر ملک ہمارے اوپر تنگ کردیا گیا ہے
لیکن یہ سب اسلام کی وجہ سے ہمارے ساتھ کیا جارہا ہے شریعت کا دم بھرنے کی وجہ سے کیا جارہا
شریعت کا اتباع مقدم ہے شریعت ہی اول آخر ہے ہم نے جب شرع کی غلامی قبول کرلی ایمان لےآئے تو اب سب کچھ شریعت ہے
ہمارے جذبات ہمارے احساسات ہمارا قول ہمارا فعل ہمارا ہر ہر قدم شریعت کے مطابق ہونا چاہئے
روسی سفیر کے قتل پر ہمارے جذبات کو ممکن ہے کہ کچھ راحت پہنچے کیوں کہ ہمارے بچوں کو بڑی بے دردی سے اسکولوں ہسپتالوں میں مارا ہے ممکن ہے ایک لمحے کو دل چاہے کہ اچھا ہوا
لیکن !!!
یہ درست نہیں
یہ خلاف شرع ہے
یہ نصوص کی کھلی خلاف ورزی ہے
شریعت دل کے فتووں اور جذبات سے اہم ہے
یہ غلط ہے
یہ تاویل کہ اور کونسے سارے کام شرع کے مطابق ہورہے ہیں جو اسپر شریعت یاد آگئی
یہ میری آپکی کمزوری ہے کہ سارے کام شرع کے مطابق نہیں کررہے لیکن یہ جواز کی وجہ نہیں کہ ایک بلکل خلاف شرع کام کو ہم درست کہیں
یہ روسی صدر کا قتل ہوتا تو میں آپکے ساتھ جشن مناتا یہ روسی کمانڈر آنچیف کا قتل ہوتا تو میں لڈیاں ڈالتا لیکن یہ ایک سفیر کا قتل ہے اور گھر بلا کر قتل ہے قاتل کا جذبہ صادق ہوگا لیکن فعل غلط تھا ہے اور رہے گا
ملا عبدالسلام کے ساتھ بھی اچھا نہیں کیا ہم تو معتدل لوگ ہیں معتدل مطلب اہل السنت والجماعت اس وقت ملا صاحب کی گرفتاری کو بھی غلط کہا اور آج سفیر روس کے قتل کو بھی غلط کہہ رہے ہیں
اگرچہ یہ رد عمل ہے اور ممکن ہے گولن کی سازش بھی ہو جیسے روسی طیارہ گرانے والا بھی گولن کا آدمی تھا خیر مجھے سیاسی امور نہیں ڈسکس کرنے ہیں مجھے بتانا ے کہ جو بھی شرع کے مخالف کام کرے اسکی تائید نہیں ہوسکتی
دوستو !!!
ادخلو فی السلم کافہ
اسلام میں پورے کا پورا داخل ہونا ہے
ہمارا جسم بھی دل بھی جذبہ بھی سب تابع شرع ہوں
ایک لمحے کو کلیجے میں ٹھنڈ سی پڑتی محسوس ہوئی لیکن پھر رسول خدا ﷺ کا عمل آنکھوں کے سامنے آگیا مسیلمہ کذاب جیسے واجب القتل کے دو سفیروں کو جنہوں نے رسول خداﷺ کے سامنے تکذیب رسول کی لیکن اس وجہ سے قتل نہ کئے گئے کہ وہ سفیر تھے
اس لئے یہ قتل روسی سفیر کی تائید نہیں کی جاسکتی اسی طرح ترکی اور ال سعود کا منافقانہ کردار بلخصوص اور دیگر اسلامی ممالک کا بالعموم کردار کی بھی تائید نہیں کی جاسکتی
ال مجوس روس اور امریکی اور نصیری گٹھ جوڑ بھی شیاطین کا اجتماع اور انسانیت کے قتل کی منظم جتھہ بندی ہے