اسلام بلاگ میرا نقطہ نگاہ

اعتدال پسندی کامطالبہ صرف مسلمانوں‌سے کیوں– انس انیس



امریکہ وفرانس وغیرہ میں حملہ ہو جائے ایک غبارہ بھی پھٹ جائے تو چیخ چیخ کر پوری دنیا کو سر پر اٹھا لیا جاتا ہے؛ گستاخانہ خاکے شائع ہونے لگتے ہیں؛ مسلمانوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع ہو جاتا ہے؛لبرلز وسیکولز امن کا صحیفہ پڑھانے شروع ہو جاتے ہیں اقوام متحدہ میں قرار دادیں پیش کی جاتی ہیں؛ انسانیت کا سبق پڑھایا جاتا ہے؛ لیکن جب باری امت مسلمہ کی آتی ہے؛ بات جب کشمیر میں رقم ہوتی ظلم و جبر کی داستان پر آتی ہے؛ بات جب عراق وفسطین وافغانستان میں کٹتے بکھرتے؛ ٹکڑے ہوتے فضا میں اڑتے جسموں کے ٹکڑوں؛ بم وبارود سے پھٹتی سرنگوں کی آتی ہے؛ یمن میں مسمار بستیوں کی آتی ہے؛ شام میں خون مسلم کی ہولی کھیلنے؛ ظلم وستم شیطنیت کے برسر عام رقص کرنے کی آتی ہے؛ سسکتی آہوں پکارتی صداؤں لٹتی بہنوں؛ معصوم پھولوں کی آتی ہے؛ بات جب برما میں مسلمانوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹے جانے پر آتی ہے تو لبوں پر مہر لگ جاتی ہے؛ ہر طرف خاموشی نظر آنی لگتی ہے انسانیت کا درس دینے والے لمبی تان کر سو جاتے ہیں لبرلز وسیکولرز کو سانپ سونگھ جاتا ہے؛ کیوں یہ انسان نہیں؟ محب وطن نہیں؟ عجب منافقانہ نظام ہے جو اہل کفر پر پھٹتے ایک غبارے پر سب کچھ الٹ پلٹ کر رکھ دیتا ہے اور ویران شہروں اجڑتی بستیوں کا ماتم نہیں کرتا؛ امت مسلمہ کو اعتدال پسندی روشن خیالی کا درس دیتا ہے پرویز مشرف کی باقیات این جی اوز کے پروردہ لبرل چوزے اعتدال کا سبق پڑھانے لگتے ہیں؛
کیا اعتدال پسندی اس چیز کا نام ہے کہ ظلم وستم کے بھڑکتے الاؤ کو دیکھ کر آنکھیں موند لی جائیں؟ کیا اعتدال پسندی یہ سکھاتی ہے کہ اپنی تہذیب و تمدن اور ثقافت سے دست بردار ہو جائیں؟ کیا روشن خیالی واعتدال پسندی یہ ہے کہ مردوزن کے کھلے عام اختلاط کو جائز قرار دیا جائے؟ کیا اسی کا نام اعتدال پسندی ہے کہ دینی شعائر کی بےحرمتی پر چپ چاپ بیٹھے رہیں؟ کیا یہی ہے اعتدال پسندی کہ مغرب کی کھوکھلی بےپردہ بےحیاء بےروح تہذیب کو اپنے اوپر اوڑھ لیا جائے؟ تو پھر سنیے
ہم ایسی اعتدال پسندی پر ہزار بار لعنت بھیجتے ہیں؛ ایسی روشن خیالی کو کوڑے دان کی نذر کرتے ہیں جو ماں بیٹی کا فرق ختم کر دے؛ ایسی اعتدال پسندی سے نفرت کرتے ہیں جو امت مسلمہ پر جاری بربریت وحشت ظلم و ستم پر خاموشی کا درس دے؛ ہمیں اپنے اسلام پر فخر ہے اپنے آباء کے کارناموں پر فخر ہے اپنی اسلاف کی راستوں پر چلتے ہوئے مسرت محسوس کرتے ہیں؛ ایسی روشن خیالی کا درس ہمیں مت دیجئے ؛ ایسی اعتدال پسندی کا سبق ہمیں مت پڑھائیں؛