لکھاری لکھاری » میرے مطابق » مولوی بمقابلہ نیل آرمسٹرانگ

ad




ad




اشتہار




لکھاری میرے مطابق

مولوی بمقابلہ نیل آرمسٹرانگ


مزے کی بات یہ کہ یہ چیختا چنگاڑتا آدمی پاکستانی ہے۔ درست اس تصویر کو ہم اپنے مولویوں کا چہرہ تسلیم کرلیتے ہیں۔ جو نیل آرمسٹرانگ سے مقابلہ نہ کرسکے۔ اور ایڈیسن سے ہار گئے۔
ویسے یہ انصاف کے اصولوں کے منافی بات نہ ہوئی کہ ہم دیہی علاقوں میں آباد مدارس سے فارغ ہونے والے لوگوں کا مقابلہ مغربی موجدین سے کریں۔

کیا یہ بہتر نہ ہوتا اگر ہم ان مولویوں کے مقابلے میں کسی پاکستانی یونیورسٹی سے فارغ التحصیل سائنس دان کی تصویر کسی بڑی ایجاد کے ساتھ پیش کرتے، کسی دریافت کسی انکشاف کے ساتھ پیش کرتے۔
بیشک پاکستانی مولوی سب سے پیچے ہر محاز کے نیچے رہے گئے۔ مگر آپ پاکستانی لبرل بتائے آپ کہاں کھڑے ہیں۔ اپ نے کیا ایجاد کرلیا؟ مغرب کو چھوڑیں اپنی سنائیں۔ مغرب والے تو ہمیں اپنے ممالک میں داخلے سے قبل بغیر کسی امتیاز کے ننگا کرنا اپنا فریضہ سمجھتے ہیں۔ آپ حضرات ذرا خلاؤں سے نیچھے آجائے۔ بتائے کیا کرلیا آپ نے؟

سوال یہ ہے ہماری ٹاپ کی یونیورسٹیاں کس ملا کی سرپرستی میں چلتی ہیں؟ کونسے مولوی نے مطالبہ کیا ہے کہ ان یونیورسٹیوں کو مدارس میں تبدیل کردیا جائے۔ ساری دنیا جانتی ہے کہ یہ تعلیمی ادارے آپ کے ہم خیال لوگوں کے زیر تربیت ہی چل رہے ہیں۔ جہاں کسی تجربے مشاہدے کے لئے آپ کو محکمہ قانون سے اجازت نہیں لینی پڑتی۔ جبکہ مدارس میں تو سیرت النبی کانفرنس کے لئے بھی پیشگی اجازت مانگنا لازم ہے۔
ایجاد کو چھوڑ دیں کوئی ایسا مقالہ جو آپ نے مرتب کیا ہو اور دنیا میں مقبول و مشہور ہوگیا ہو اگر کر بھی لیا ہے۔ تو ذرا اس بات کا جائزہ لے لیں کیا وہ مقالات اتنے مشہور ہوئے جتنے ان مدارس کے ترتیب دئے گئے تصانیف و تفاسیر مشہور ہوئے ہیں۔

سائنسی تجربات کو بھی رہنے دیں ۔ دیگر دنیاوی علوم کی جانب آجائے۔ کوئی ایک انگریزی ٹیچر یا رائٹر اپنے حلقے کا ایسا بتادیں۔ جو رین اینڈ مارٹن، مائیکل سوان، اور جان ایسٹ وڈ کے مقابلے کی انگریزی کتاب لائے ہو؟ ایکونومکس میں ہمارے یونیورسٹی اسٹوڈنٹ آج بھی انڈین رائٹرز کو پڑھتے ہیں۔ کیا آپ کو کسی مولوی نے روک لیا تھا۔ اس ضمن میں محنت کرنے سے ؟

پڑھائی کو چھوڑ دیں “میڈیا” لبرلزم کا سب سے بڑا معاون شعبہ کہلاتا ہے۔ اس جانب آجائے۔ کیا ہماری فلم انڈسٹری میں بھی سارے مولوی پائے جاتے ہیں ڈائریکٹر سب مولوی ہیں کیا؟ نہیں نا؛ تو کیوں آج تک ایک فلم ایسی نہ بنا سکے جس نے آسکر ایوارڈ تو دور کسی ہندوستانی فلم کو مات دی ہو؟

کیا وجہ ہے کہ مولوی کے کہنے پر ایک شخص خود کو پھوڑنے پر آمادہ ہوجاتا ہے۔ اور آپ کے کہنے پر کوئی سائنس دان بننے تک کو تیار نہیں ہورہا۔؟؟

کیوں آپ میں ایک جارج گلیلوے آج تک پیدا نہ ہوسکا؟
آپ کس بیماری کی دوا ہے۔

اگر یہ تصویر ایک مولوی کی تصویر ہے تو یہ بھی یاد رکھیں یہ تصویر آپ کی ستر سالہ مایوس کن کارکردگی کا بھی منہ بولتا ثبوت ہے۔ یہ تصویر آپ کی بھی روداد کا بیان ہے۔ کہ آپ ماسوائے اعتراض کے نئے نئے طریقے کے اور کچھ بھی ایجاد نہ کرسکے۔
اچھا ہوتا کہ نیل آرمسٹرانگ کے مقابلے میں آپ اسپارکو کے کسی سائنٹسٹ کی تصویر دیتے مگر نہیں آپ تو چاہتے کہ ایجادات اور خلائی راکٹ کسی مدرسے یا ملا کے گھر سے برآمد ہو۔ اور یونیورسٹیوں میں بس ویلنٹائن ڈے منائے جائے۔