لکھاری لکھاری » میرے مطابق » دو نمبر افراد اور داڑھی

ad




ad




اشتہار




لکھاری میرے مطابق

دو نمبر افراد اور داڑھی


کسی بھی طبقے کے دو نمبر افراد کو بنیاد بنا کر معروف وضع قطع کے حامل پورے طبقے کو مجموعی طور پر تنقید و طنز کا نشانہ بنانے کو سوائے علم و شعور کی کمی کے اور کچھ نہیں کہا جا سکتا…

80 فیصد دجالیت پسند دو نمبر افراد خلق خدا کو دھوکہ دینے کے لیے ایسے طبقات کی وضع قطع اپناتے ہیں جو معاشرے میں صدق و امانت کی ظاہری علامت سمجھی جاتی ہو تاکہ ایک تیر سے دو شکار کیے جا سکیں،ایک تو اس وضع قطع سے خلق خدا کو متنفر کیا جا سکے اور پکڑے جانے کی صورت میں مخصوص وضع قطع کو اپنی حفاظتی ڈھال بنایا جا سکے…

اگر ہم کسی بھی طبقے کے دجالیت پسند دو نمبر افراد کے شر سے خلق خدا کو ہوشیار کرنا چاہتے ہیں تو کسی بھی طبقے کو مجموعی طور پر تنقید کا نشانہ نہ بنائیں اور نہ ہی ظاہری وضع قطع کو نشانہ بنائیں چاہے وہ داڑھی جیسی سنت سے مزین چہرے والے ہوں یا مکمل کلین شیو ہوں بلکہ صرف ان طبقات میں چھپی ہوئی کالی بھیڑوں کے انفرادی اعمالِ بد کا تذکرہ کریں تاکہ وہ اپنی دو نمبریوں پر اپنی وضع قطع کی تقدیس کی چادر نہ ڈال سکیں…