لکھاری لکھاری » بلاگ » نوازشریف کی نااہلی ،زرداری کی بریت،دال کالی کیوں ہے؟-محمدانس

ad




ad




اشتہار




بلاگ لکھاری

نوازشریف کی نااہلی ،زرداری کی بریت،دال کالی کیوں ہے؟-محمدانس


​آصف علی زرداری صاحب کو عدالتوں نے کرپشن کے مقدمات سے بری کر دیا اور کمپنی سے تنخواہ نہ لینے پر نواز شریف صاحب کو گھر بھیج دیا. عدلیہ کے اس فیصلے کی بین الاقوامی سطح  پر  جگ ہنسائی ہوئی اور خود ملک کے سنجیدہ طبقے نے اس فیصلے پر اپنے شکوک و شبہات کا اظہار کیا . نصرت جاوید صاحب نے کہا کہ نواز شریف کی کرپشن کے ریکارڈ کو نوے کی دہائی میں میں نے دیکھا لیکن اس پر عمل درآمد اب کیا گیا. سوال یہ ہے کہ وہ کونسی وجوہات تھیں کہ جن پر عمل درآمد کی ضرورت پہلے نہیں اب پیش آئی؟

زرداری صاحب کا سنگین مقدمات سے بری ہونا ایسے ویسے نہیں ہوا بلکہ اسکی بازگشت پچھلے چند ہفتوں سے مسلسل سنائی دیتی جا رہی ہے. کس طرح سابق صدر نے پاکستان واپسی پر ڈیل کی اور اب انکے قریبی ساتھیوں پر تمام تر مقدمات ختم کر کے باعزت بری کیا جا رہا ہے.ہم عدلیہ کے اس فیصلے کا احترام کرتے ہیں دونوں اطراف سے فیصلیے کو قبول کیا گیا. عدالت کا فیصلہ آتے ہی نواز شریف نے اگرچہ مگرچہ سے کام نہیں لیا بلکہ فوراً مستعفی ہو کر اپنا مقدمہ عوام کی عدالت میں پیش کر دیا.

بحیثیت ذاتی زندگی اور بعض پالیسیوں کی وجہ سے نواز شریف صاحب کے ساتھ اختلاف ممکن ہے لیکن اس فیصلے میں جس طرح آئین و قانون کی دھجیاں اڑائیں گئ اسکی ساری حقیقت زرداری صاحب کے تمام مقدمات سے باعزت بری ہونے کے بعد اب دھیرے دھیرے سامنے آتی جا رہی ہے.حالانکہ زرداری صاحب کچھ دودھ سے دھلے ہوئے نہیں ہیں انکے خلاف بھی فیصلہ آ سکتا تھا. جو لوگ پانامہ کی گنگا میں اشنان کرنے والے تمام افراد کے خلاف عدالت جانے کا کہہ رہے تھے انہیں نواز شریف کے جانے کے بعد  سانپ سونگھ گیا.  بات وہیں آ جاتی ہے تیری زلفوں میں پہنچےتو سبھی ایک ہوئے.

اس ساری صورتحال میں دیکھنے کی چیز عمران خان صاحب کے یوٹرن ہیں نواز شریف کے خلاف فیصلہ آنے پر اب تک عدلیہ کے ادب و احترام کے گیت گائے جا رہے تھے خوشیوں کے  شادیانے بجائے جا رہے تھے اب زرداری صاحب کے حق میں فیصلہ کیا آیا کہ دنیا بھر کی ساری ویرانیاں خان صاحب کے مرجھائے چہرے پر نظر آنے لگیں خان صاحب نے اس فیصلے کو عدلیہ کے ساتھ مک مکاؤ سے تعبیر کیا.

اور خود کا حال یہ ہے کہ الیکشن کمیشن اور عدلیہ سے راہ فرار اختیار کرنے کے نت نئے بھانے تلاش رہے ہیں جس بساط کو یکلخت لپیٹنے کی کوششیں خان صاحب کر رہے تھے افسوس ان ساری کوششوں پر ناموافق حالات نے پانی پھیر دیا.

 


About the author

انس انیس

محمد انس ہزارہ ڈویژن کے علاقے حضرو سے تعلق رکھتے ہیں لکھاری ڈاٹ کام کے معاون چیف ایڈیٹر ہیں ،روزنامہ نئی بات میں کالم بھی لکھتے ہیں ،بقول انس انیس
علمی دنیا کا مسافر ؛ دلیل کا طالب؛ سچائی کی جستجو میں سرگرداں اک ذرہ بے نشان.

Add Comment

Click here to post a comment