احتیاط احتیاط احتیاط ۔ کہیں حضور ﷺ ناراض نہ ہوجائیں ۔اسامہ بن نسیم کیانی


15094939_653277674846455_2474933605601746897_n-1
انتہائی افسوس ناک بات ہے کہ کچھ لوگ ٹوئٹر اور فیس بک پر مولانا طارق جمیل صاحب اور جنید بھائی کے مشترکہ دوست کے خواب کا مذاق طرح طرح کی جگتیں مار کر، اور مذاق اُڑا کر لائکس و کمنٹس کا بیوپار کر رہے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ پہلی بات تو یہ کہ جہاں ہم سب کے آقا و مولیٰ ﷺ ، باعثِ تخلیقِ کائنات ﷺ کا نامِ مبارک آئے وہاں سانس لیتے ہوئے بھی حد درجہ احتیاط کرنی چاہیے ، ایک لفظ بولتے ہوئے سو سو بار سوچنا چاہیے ، کہ کہیں ہم نام نہاد ”سچ ” بولتے ہوئے اپنے آقا ﷺ کی ناراضگی کا باعث نہ بن جائیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اللہ نے جنت بھی بنائی ہے ، جہنم کا خالق بھی خدا ہے ، جو اللہ کے رسول ﷺ کا دل دکھائے گا وہ جہنم میں اور جو جو حضور ﷺ کی نگاہِ کریمی میں معتبر ٹھہرے گا وہ جنت کا حقدار ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سوال یہ ہے کہ حضور ﷺ کسی اُمتی کے خواب میں آسکتے ہیں؟ جواب یہ ہے بلکل ہاں کیوں نہیں ، بہت سی بزرگ ہستیوں کے خواب میں حضورِ پُرنور علیہ سلام آتے رہے ہیں ۔ خؤد روضہِ رسول ﷺ کا وجود بھی سلطان نور الدین زنگی کے خواب میں آپ ﷺ کے پیغام کا نتیجہ ہے ۔ اللہ جس سے راضی ہوجائے اُسے ولی کہتے ہیں ، عام مسلمان کی سب سے بڑی خواہش جنت ہوتی ہے جبکہ اولیاء کی سب سے بڑی خؤاہش حضورﷺ کا دیدار ہوتا ہے ، جو اللہ معمولی سے بھی معمولی نیکیوں کو بہانہ بنا کر جنت میں داخل کرتا ہے ، وہ اپنے نیک بندوں کو حضرت محمد ﷺ کا دیدار کروا دے یہ کونسی معیوب بات ہے ۔ جنید بھائی کے دوست کے خواب کی دو ہی صورتیں ہوسکتی ہیں
پہلی :اُنھیں خواب میں حضور پاک ﷺ کی زیارت ہوئی ۔
دوسری: اُنھیں زیارت نہیں ہوئی ۔
اگر اُنھیں زیارت نہیں ہوئی اور اُنھوں نے جھوٹ بولا تو حدیثِ پاک کا مفہوم ذہن میں رہے ” جو مجھ سے کوئی ایسی بات منسوب کرے جو میں نے نہیں کہی تو اُسکا ٹھکانہ جہنم ہے ” ۔ ہمیں اُن کی فکر نہیں کرنی چاہیے ۔
اور اگر واقعی زیارت ہوئی ہے تو ہم اپنا انجام سوچ لیں کہ کیسے حضور ﷺ سے منسوب ایک خواب کا ہم مذاق اُڑا رہے ہیں ، اور اُس خواب کی نقل میں ”میرے خواب میں قطرینہ آئی / بلاول بھٹو آیا/ وغیرہ وغیرہ کہہ کر کہیں اپنی آخرت تو نہیں خراب کررہے؟
احتیاط کیجئے ،


You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *