پاکستان میں جانوروں کے بھی شناختی کارڈ بنانے کا فیصلہ

  • 78
    Shares

پاکستان میں انسانوں کے بعد اب جانوروں کے بھی شناختی کارڈ بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔جی ہاں پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ایسے منفرد قانون کے نفاذ کیلئے تیاری کی جاررہی ہے جو کہ جانوروں کیلئے شناختی کارڈ کی پابندی کو یقینی بنائے گا۔اس مقصد کیلئے نادرا کی طرح ایک ادارے کا قیام بھی عمل میں لایا جائے گا جو جانوروں کیلئے شناخت کارڈ ،ویزا اورپاسپورٹ جاری کرے گا ۔

یہ کارنامہ کوئی اور نہیں بلکہ سندھ حکومت سرانجام دینے جارہی ہے ۔سندھ حکومت کے محکمہ لائیواسٹاک نے اس کی تیاریاں بھی شروع کردی ہیں ۔جبکہ اس حوالے سے ایک بل بھی تیارکرلیا گیا ہے ۔جبکہ اس کیلئے رجسٹریشن اتھارٹی کا قیام بھی عمل میں لایا جائے گا جو کہ محکمہ لائیواسٹاک کے ماتحت کام کرے گی۔

یہ سب کاغذوں میں نہیں ہوگا بلکہ سارا سسٹم کمپوٹرائزڈ ہوگا۔جس کے کیلئے جانوروں کا سینٹرل ڈیٹا بیس بھی بنایا جائے گا۔اس قانون کے تحت جانورمالکان کو جانوروں کی نقل و حرکت اور پیدائش اور انتقال سے متعلق بھی لائیور اسٹاک اتھارٹی کو آگاہ کرنا ہوگا۔جبکہ جانوروں کیلئے پیدائش و انتقال اور بیرون شہر روانگی کی دستاویزات بھی لینی ہوں گی۔جبکہ کمپیوٹرئازڈ ڈیٹابیس میں جانوروں کی پیدائشں اور اموات کا ریکارڈ بھی درج کیا جائے گا۔

مزیداربات یہ ہے کہ انسانوں کی طرح جانوروں کو بھی مخصوص شناختی نمبر الاٹ کیا جائے گا۔جبکہ کسی بھی جانور کو زبح کرنے کیلئے زبح خانے میں لانے پر متعلقہ اتھارٹی کو آگاہ کرنا لازمی ہوگا۔اس کے علاوہ لائیو اسٹاک اتھارٹی جانوروں کی ویلفئیر اور نیوٹریشن پر کام کریگی ۔یہی نہیں بلکہ قصابوں کی بھی تربیت کی جائے گی اور ان کی رجسٹریشن بھی کی جائے گی۔

سندھ حکومت اگر ایسا کرنے میں کامیاب ہوجاتی ہے تو بلاشبہ یہ ایک انقلابی قدم ہوگا اور اس کے ذریعے ملک میں ایک جدید سسٹم آئے گا جس کے ذریعے جانوروں کے حقوق کا تحفظ ممکن بنایا جاسکے گا۔


  • 78
    Shares

You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *