مسلم لیگ ن ٹوٹ سکتی ہے ۔مبشرلقمان کا دعویٰ


موجودہ حکومت کا یہ آخری سال ہے اور جیسے جیسے الیکشن قریب آرہا ہے ملک کے سیاسی درجہ حرارت میں بھی اضافہ ہورہا ہے جبکہ شریف فیملی جو ملک میں اس وقت حکمران جماعت مسلم لیگ ن کی سربراہ بھی ہے اس کے متعلق قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں جن میں ایک بڑی قیاس آرائی یہ ہے کہ مسلم لیگ ن جلد ہی ٹوٹنے والی ہے ۔اور اس کے ممبران اسمبلی جلد ہی ن لیگ چھوڑ جائیں گے

ایسا ہی ایک دعویٰ سماء کے اینکر پرسن اور سینئر صحافی مبشر لقمان نے کیا ہے انہوں نے اپنے پروگرام میں کہا ہے کہ شریف خاندان کو ڈر ہے کہ اسحاق ڈار وعدہ معاف گواہ نہ بن جائیں اس لئے کرپشن کے پول کھلنے کے ڈر سے انہیں لندن میں ہی قیام کا مشورہ دیا گیا ہے، مسلم لیگ ن کے اراکین اسمبلی کی بڑیتعداد فارورڈ بلاک نہیں بلکہ ایک الگ جماعت کی صورت میں سامنے آئے گی،15دسمبر کے بعد کسی بھی وقت اسمبلیاں تحلیل کر دی جائیں گی،

اینکر پرسن مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ شریف خاندانکو ڈر ہے کہ اسحاق ڈار اگر پاکستان آئے تو وہ یہاں آکر شریف خاندان کے خلاف وعدہ معاف گواہ بن سکتے ہیں لہٰذا انہیں لندن میں ہی قیام کا مشورہ دیا گیا ہے۔ مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ اسحاق ڈار ایک کمزور دل شخص ہیں اور شریفوں کو ڈر ہے کہ کہیں پریشر میں آکر اسحاق ڈار حدیبیہ سمیت دیگر میگا پراجیکٹس میں بھی کرپشن کے پول نہ کھول دیں۔ مسلم لیگ ن کی اندرونی سیاست کے حوالے سے مبشر لقمان نے کہا کہ وہ وقت دور نہیں جب مسلم لیگ ن کے راکین اسمبلی کی بڑی تعداد فارورڈ بلاک نہیں بلکہ الگ جماعت کی صورت میں سامنے آئے گی۔ پاکستان کی سیاسی صورتحال میں قبل از وقت انتخابات کیلئے اسمبلیوں کی تحلیل کی بازگشت پر بات کرتے ہوئے مبشر لقمان نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ 15دسمبر کے بعد کسی بھی وقت اسمبلیاں تحلیل کی جا سکتی ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل عمران خان بھی قبل ازوقت الیکشن کا کہہ چکے ہین اور یہاں تک کہ انہوں نے پختونخواہ اسمبلی بھی توڑنے کی بات بھی کردی تھی جس پر ان کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد منظور کی گئی ۔


You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *