مریم نواز پر چوہدری نثار کے بیان سے خوشی ہوئی ، عمران خان

  • 13
    Shares

پاناما فیصلہ آنے کے بعد سے سیاسی کشمکش عروج پر پہنچ چکی ہے ۔نواز شریف کی نااہلی کے بعد عمران خان اور مریم نواز شریف کے ایک دوسرے کے خلاف کھل کر سامنے آگئے ہیں ۔حال ہی میں مریم نواز شریف کے متعلق عمران خان نے کہا تھا کہ مریم نواز کی قابلیت ہی کیا ہے کہ وہ صرف ایم اے انگلش ہے ۔

جبکہ این اے 20 میں کامیابی کے بعد مریم نواز نے جوابی وار کرتے ہوئے بیان دیا تھا کہ اس وقت خان صاحب رو روہے ہیں گے یہ ان کے رونے کا وقت ہے

اب وہ عمران خان ہی کیا جو کسی کا ادھار باقی رکھے اس لئے عمران خان بھی موقع کی تاک میں رہے اور جیسے ہی چوہدری نثار علی خان نے مریم نواز کے متعلق بیان دیا کہ مریم کو ابھی سیاست میں بہت کچھ کرنا ہے اور اس کی قابلیت اس کے سوا کچھ نہیں کہ وہ نواز شریف کی بیٹی ہیں ۔مریم نواز کو اپنیا اہلیت ثابت کرنا ہوگی۔صرف نواز شریف کی بیٹی ہونے کی وجہ سے ہونا کو قائد تسلیم نہیں کرسکتا۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے بھی اس موقع کے فائدہ اٹھایا اورایک بار پھر سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو تنقید کا نشانہ بنایا  عمران خان نے کہا ہے کہ خوشی ہوئی کہ چوہدری نثار نے کہا کہ مریم نواز کی کیا قابلیت ہے ۔

تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ چوہدری نثار کی تحریک اںصاف میں شمولیت کا فی الحال کوئی امکان نہیں ہے۔ چوہدری نثار ان کے دوست ہیں تاہم دونوں کے درمیان اس حوالے سے کسی قسم کی کوئی بات چیت نہیں ہوئی۔

اپنے   انٹرویو میں عمران خان نے  یہ دعویٰ بھی کیا ہے  کہ این اے 120میں 3یونین کونسلوں میں دھاندلی کے شواہد ملے مگر ہم شکست تسلیم کرتے ہیں۔چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ انتخابی مہم دیر سے شروع کی گئی ورنہ نتائج ہمارے لیے اور بہتر آتے۔

[abc]

لگے ہاتھوں حلقے کی عوام کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے عمران خان نے حلقے کے عوام پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ جن لوگوں نے مسلم لیگ ن کو ووٹ دیا میں ان سے کہتا ہوں کہ آئندہ ان کے گھر چوری ہو تو کہا کریں چور زندہ باد، چور زندہ باد۔

واضح رہے کہ این اے 120 میں ن لیگ کی کامیابی نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو مایوس کردیاہے، انہوں نے ضمنی انتخاب کو عدالتی فیصلے سے نتھی کردیا تھا۔

عمران خان کو حلقہ این اے 120 سے کامیابی کی بہت امیدیں تھیں اور انہوں نے اس حوالے سے دعویٰ کیا تھا کہ نتائج ثابت کریں گے کہ عوام عدالتی فیصلے کے ساتھ ہیں یا نہیں۔


  • 13
    Shares

You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *