عمران خان کا انصاف اور میرا خواب


آج تو میں بھی عمران خان کا فین ہوگیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔
واہ کیا خوب منظر تھا ۔
ہزاروں لوگ جمع تھے ۔
مجھ سمیت سب دیکھنے والے اس انداز انصاف پر دل کی گہرائی سے عمران خان کو لمبی عمر کی دعاؤں سے نواز رہے تھے ۔
انصاف کا اعلی معیار اور عمران خان کی ذاتی دلچسبی دیکھ کر مجھ سمیت سارا ہزاروں افراد کا مجمع اپنے دل عمران خان پر ہار رہا تھا
اور عمران خان سب کے دل جیت رہے تھے ۔
ہوا یوں کہ عمران خان خیبر پختون خواہ کے شہر ڈیرہ اسماعیل خان اس مظلوم لڑکی کے گھر آئے
جس کو پندرہ دن پہلے سجاول نامی آدمی کی سربراہی میں کچھ مسلح لوگوں نے مبینہ طور پر علی امین گندا پوری وزیر مال خیبر پختون خواہ کی شہ پر سولہ سال کی لڑکی شریفاں بی بی کو ننگا کر کے بازار میں ایک گھنٹے تک گھما یا اور پھیرایا گیا تھا
انصاف دینے پہنچ گئے
میرے سمیت سارا مجمع ہی ایک دوسرے سے کہہ رہا تھا کہ عمران خان دیر آ ید مگر درست آ ید ثابت ہوے
عمران خان نے بھرے مجمع میں پہلے تو خٹک کی شدید کلاس لی سست توجہ پر،
اور پھر جلسوں کی مصروفیات کی وجہ سے لیٹ ہونے پر خود بھی عوام سے معافی مانگتے ہوۓ خٹک سے کہا،
آئی جی صوبہ کو گرفتار کرلیا جائے
سارے ملزمان کو پکڑ کر قانون کے مطابق سخت سے سخت سزا دی جائے
مجرموں کی پشت پناہی کرنے والے تحریک انصاف کے وزیر کو عبرت ناک سزا دے کر خود سے پارٹی سے اور حکومت سے الگ کیا جائے
اور سارے مجرموں سے فی کس تین تین لاکھ اور بیس لاکھ سرکاری خزانے سے ملا کر مظلوم فیملی کی مدد کی جائے
اور لڑکی کے والد یا بھائی کو معقول سرکاری ملازمت دی جائے!!
سب کان کھول کر سن لو
جب تک عمران خان زندہ ہے کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہونے دونگا
میں جہاں بھی ہونگا مظلوم کی مدد کیلیے پہلی فرصت میں پہنچ جاؤنگا
آج بھی میں محمد بن قاسم کی سنت پر عمل پیرا ہوتے ہوئے سندھ سے سیاسی مصروفیات کو چھوڑ چھاڑ کر انصاف دلانے کیلئے مظلوم شریفاں بیٹی کے گھر آیا ہوں
عمران خان کی تقریر کا ایک ایک لفظ روح کو مسرور
اور دل کو خوشی سے نہال
اور سامنے انصاف کا عمل ہوتے ہوۓ اور مظلوم فیملی کے چہروں پر خوشی کے نمایاں رنگ
دیکھ کر آنکھیں شٙکر کی طرح میٹھی ہو ہی رہیں تھیں کہ مجھے گھر والوں نے نماز فجر کیلیے نیند سے جگا دیا


You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *